صیہونی جبر و استبداد کیخلاف مزاحمت کی علامت بن جانیوالی فلسطینی لڑکی عہد تمیمی آج کہاں اور کس حال میں ہے

Loading...

مقبوضہ بیت المقدس (این این آئی)فلسطین کے علاقے غرب اردن سے تعلق رکھنے والی ایک کم عمر فلسطینی لڑکی عہد تمیمی اور اس کی والدہ ناریمان کو آٹھ ماہ قید میں رکھنے کے بعد اتوار کو رہا کردیاگیا،عرب ٹی وی کے مطابق غرب اردن کے وسطی شہر رام اللہ کے نواحی علاقے النبی الصالح کی رہائشی سولہ سالہ عہد تمیمی کو گذشتہ برس کے آخر میں اس وقت اسرائیلی فوجیوں نےحراست میں لیا تھا جب اس نے اپنے گھر پر دھاوا بولنے والے غاصب صہیونی فوجیوں کو دھکے دے کر باہر نکال دیا تھا۔ اس واقعے کی ایک فوٹیج سامنے آنے کے بعد عہد تمیمی اور اس کی والدہ کے خلاف مقدمہ چلایا گیا اور انہیں آٹھ ماہ قید کی سزا دی گئی تھی۔19 دسمبر 2017ء کو جاری ہونے والی ایک ویڈیو میں عہد تمیمی اور اس کی کزن نور التمیمی کو اسرائیلی فوجیوں کو اپنے گھرسے باہرنکلنے کے لیے ان سے تکرار کرتے دیکھا گیا۔ گھر کی چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کرنے والے صہیونی فوجیوں نے جب نکلنے سے انکارکیا توعہد تمیمی نے دو فوجیوں کو تھپڑ مارے تھے۔اکیس مارچ کو اسرائیل کی عوفر فوجی عدالت نے عہد تمیمی کو فوج کے کام میں مداخلت اور ان کے لیے خطرہ بننے کے الزام میں اسے آٹھ ماہ قید کی سزا سنائی تھی۔سترہ سالہ عہد تمیمی کی گرفتاری اور اس کے ٹرائل پر انسانی حقوق کی تنظیموں کی طرف سے صہیونی ریاست پر شدید تنقید کی گئی تھی۔ فلسطینی مزاحمتی قوتوں اور صدر محمود عباس نے بھی عہد تمیمی کی جرات کو خراج تحسین پیش کیا تھا۔مقامی میڈیا کے مطابق فلسطین کے علاقے غرب اردن سے تعلق رکھنے والی ایک کم عمر فلسطینی لڑکی عہد تمیمی اور اس کی والدہ ناریمان کو آٹھ ماہ قید میں رکھنے کے بعد اتوار کو رہا کردیاگیا،رہائی کے موقع پر فلسطینی گروپوں نے احد تمیمی کاشاندار استقبال کیا اورجلوس کی شکل میں احد تمیمی میں لیکر ان کے گائوں روانہ ہوئے،میڈیار پورٹس کے مطابق احد تمیمی جلد فلسطینی صدر محمود عباس سے بھی ملاقات کریں گی اوران کا ایک پریس کانفرنس سے بھی خطاب متوقع ہے۔

Loading...

اپنا تبصرہ بھیجیں